Islamic Circle Of North America.. by Tayyaba Zia

4 May, 2010
(0) Comment   |  Print This Post Print This Post   |  Email This Post Email This Post   |    Share on Facebook  |  

اسلامک سرکل آف نارتھ امریکہ کی خدمات !

طیبہ ضیاء ـ

امریکہ میں تنظیم ”اکنا“(اسلامک سرکل آف نارتھ امریکہ) کیلئے فنڈ جمع کرنے کی تقریبات کا اہتمام ہوتا رہتا ہے۔چند روز قبل نیویارک کے ایک مقامی ہوٹل میں منعقد ہونے والے فنڈ ریزنگ ڈنر میں مجھے بھی شرکت کا موقع ملا۔ اکنا ریلیف کی سرگرمیوں کے حوالے سے ایک دستاویز فلم دکھائی گئی جس میں امریکہ بھر سے غیر مسلم اور مسلمان مردو خواتین کے انٹرویو دیکھ کر مسلمان ہونے پر فخر محسوس کرتا ہے۔ امریکہ میںاکنا ریلیف کی خدمات مثالی ہیں۔ امریکہ میں لاتعداد شیلٹر ہومز ہیں مگرمسلم شیلٹر ہوم پہلی بار دیکھا ہے۔ ” ICNA “ریلیف پراجیکٹ کے انچارج برادر ایوب باداب کے ساتھ ان کے دفتر میں ملاقات ہوئی۔ برادر ایوب دل کے بھی امیر ہیں ۔ بے لوث خدمت خلق میں دن رات مصروف ہیں ۔ ان کی ٹیم عملی مسلمانوں پر مشتمل ہے۔ برادر ایوب نے بتایا کہ اکنا ریلیف منصوبہ اکناتنظیم کا ایک حصہ ہے جس کے تحت مختلف رضاکارانہ خدمات انجام دی جاتی ہیں۔ خدمت خلق کی اس عبادت میں مذہب کی تفریق نہیں کی جاتی۔ اکنا ریلیف سے غیرمسلم بھی مستفید ہوتے ہیں۔ ریلیف منصوبہ کے تحت شیلٹر ہوم، فیونر ل سروس، کونسلنگ ،فیملی سروس،فوسٹر کئیر،فوڈ ڈرائیور، فوڈ بینک، رفیوجی سروس جیسے اہم شعبے خدمات انجام دے رہے ہیں۔ نیویارک شیلٹر ہوم میں دس خواتین کی عارضی رہائش کی گنجائش ہے۔ بے گھر اور ضرورتمند خواتین کو ایک سال قیام کی اجازت ہے۔ اکنا ریلیف کی جانب سے چھ ماہ تک پچاس ڈالر ماہانہ جیب خرچ ادا کیا جاتاہے اور اس عرصہ کے دوران خواتین کو پیروں پر کھڑا کرنے کے قابل بنایا جاتا ہے ۔ شیلٹر ہوم میں ان خواتین سے ملاقات ہوئی جن میں دو پاکستانی ہیں۔ان خواتین کی کہانیاں سن کر اندازہ ہوا کہ ان بے سہارا خواتین کے لئے شیلٹر ہوم نعمت ہے اس میں صرف دس خواتین کے سر چھپانے کی گنجائش ہے۔ اگر مسلمان دل کھول کر مالی امداد کریں تو مزید گھر کرائے پر لئے جا سکتے ہیں اور مزید بے نصیب بے گھر خواتین کو چھت مل سکتی ہے۔کسی ایک بہن کو بھی چھت مل جائے تو اس سے بڑا صدقہ جاریہ کوئی نہیں۔ پاکستان میں مالی امداد کی جاتی ہے جبکہ امریکہ میں بے شمار لوگ بے گھر اور بیروزگار ہیں بالخصوص یہاں کی مسلم برادری کی مدد ہمارا اولین فرض ہے جسے ہم نظر انداز کر دیتے ہیں۔
جو مسلمان اس عظیم کارخیر میں اپنا حصہ ڈالنا چاہتاہے وہ اکناریلیف سے رابطہ کر سکتا ہے۔ 1-800-354-0102
www.icnarelief.org


Categories : Tayyaba Zia,Urdu Columnists Tags : , , , , , , , ,

Comments

No comments yet.


Leave a comment

(required)

(required)